وہ کتابیں جو اس کائنات میں سائنس کی اہمیت کو اجاگر کرتی ہیں –

آج دنیا بہت بدل چکی ہے اور لوگ اشیاء کو پرکھنے، ان میں غور و فکر کرنے، پراسرار واقعات کو کھوجنے اور ان کی سائنسی توجیہہ یا انھیں عقل کی بنیاد پر پرکھنے کی کوشش کرتے ہیں، لیکن ابھی نصف صدی پہلے تک مغرب میں بھی لوگ سائنسی شعور نہیں رکھتے تھے۔

بیسویں صدی عیسوی میں ایجادات کے ساتھ ساتھ سائنس دانوں نے اپنے علم اور مہارت کے ہر شعبے میں ایسے سیکڑوں مضامین اور کتابیں تصنیف کیں جنھیں آسان یا سادہ زبان اور عام فہم ہونے کی وجہ سے ہر طبقۂ فکر میں مقبولیت ملی اور لوگوں میں جاننے اور سیکھنے کا شوق ہی نہیں پیدا ہوا بلکہ کائنات اور زندگی کے بارے میں‌ ان کا طرزِ فکر بھی بدل گیا۔

یہاں‌ ہم تین موضوعات پر ایسی کتابوں کا تذکرہ کررہے ہیں‌ جن کا دنیا کی مختلف زبانوں‌ میں‌ ترجمہ ہوا اور سائنس کے طلبہ ہی نہیں عام لوگوں کے لیے بھی یہ کتابیں مفید اور معلوماتی ثابت ہوئیں جب کہ ان کا مطالعہ سائنسی شعور بیدار کرنے اور زندگی کو سمجھنے میں بھی مدد دیتا ہے۔

فلکیات، کونیات اور خلائی سفر
دنیا بھر میں سائنس دانوں نے اپنے علم اور ایجادات کی مدد سے کائنات کو سمجھنے کے لیے جو کوششیں کی ہیں وہ لائقِ تحسین بھی ہیں اور ہماری بقا اور ترقی بھی ان سے جڑی ہوئی ہے۔ کائنات کا شعور دینے والی ایک مشہورِ زمانہ کتاب Cosmos ہے جو ماہرِ فلکیات کارل ساگاں کی تصنیف کردہ ہے۔ اسی کے نقشِ قدم پر اسٹیفن ہاکنگ جیسے عظیم ماہرِ کونیات نے A Brief History of Time جیسی شان دار کتاب لکھ کر سائنس کی تاریخ میں اپنا نام ہمیشہ کے لیے زندہ کرلیا۔ یہ دونوں سائنس داں خلائی مخلوق سے ملاقات اور وقت کے ساتھ سفر کی آرزو لیے اس دنیا سے چلے تو گئے، لیکن ان کی فکر اور تجربات آنے والوں کو وہ راستہ سجھا گئے ہیں‌ جس میں امکانات کی روشنی نظر آتی ہے۔ ان دونوں کتابوں کو مزید سہل بنانے کی کوشش سائمن سنگھ نے Big Bang: The Origin of the Universe کے ذریعے کی ہے۔

حیاتیات اور فطری تاریخ
حیاتیات کے موضوع پر چارلس ڈارون کی نظریۂ ارتقا پر مبنی کتاب The Origin of the Species کو کسی طور فراموش نہیں کیا جاسکتا۔ کہا جاتا ہے کہ جدید دور میں اس کتاب کے علم سے بشریات کے ماہرین نے اپنی تحقیق کو آگے بڑھایا تو معلوم ہوا کہ کس طرح انسان غاروں سے تہذیب کی جانب مائل ہوا۔ دوسری کتاب اسٹیفن جے گولڈ کی Wonderful Life ہے، جس کا شمار فطری تاریخ کی کلاسیک کتابوں میں ہوتا ہے۔ اسی کتاب نے قدیم ترین رکازات سے ہمیں متعارف کرایا۔

نفسیات اور عمرانیات
سگمنڈ فرائیڈ نے نفس اور نفسانی خواہشات کی فریب کاریوں اپنی کتاب The Interpretation of Dreams میں بیان کیا ہے جس نے ہمیں زندگی کو سمجھنے اور اپنے بارے میں جاننے کا موقع دیا ہے۔ نفسیات کو سائنس کے برابر مقام دلانے میں سائنسی موضوع پر اپنے کام کے لیے مشہور صحافی گولڈ مان کی کتاب Emotional Intelligence بھی اہم خیال کی جاتی ہے جو جذبات کو ذہانت سے کنٹرول کرنے کی سائنس ہے۔ عمرانیات کے شعبے میں مقدمۂ ابنِ خلدون کو کئی صدیوں بعد آج بھی پڑھا جاتا ہے اور اسے شعور و آگاہی کا بڑا ذریعہ قرار دیا جاتا ہے۔

Comments





Source link

اپنا تبصرہ لکھیں